38

امریکا میں دوران ریسلنگ ریفری نے میچ روک کر ریسلر کے بال کٹوا دیے

نیو جرسی: امریکا میں ریفری نے ریسلر کے کندھوں تک لٹکی زلفوں کو کاٹے بغیر میچ جاری رکھنے سے منع کردیا جس پر کوچ کو مجبوراً نوجوان ریسلر کے بال کاٹنے پڑے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا میں اسکول کی سطح پر ہونے والے ریسلنگ کے مقابلوں میں اُس وقت دلچسپ صورت حال پیدا ہوگئی جب میچ ریفری نے کندھوں تک بالوں کی چوٹیا بنائے کھلاڑی کو بال کاٹے بغیر میچ جاری رکھنے سے روک دیا۔

نوجوان ریسلر اینڈریو جانسن کے کوچ نے میچ ریفری کے فیصلے پر احتجاج کرتے ہوئے معاملے کو سلجھانے کی کوشش بھی کی تاہم ریفری نے اصرار کیا کہ یا تو بال کاٹے جائیں یا میچ ادھورا چھوڑ کر ناک آؤٹ کے لیے تیار ہوجائیں جس پر کوچ نے مجبوراً ریسلر کے بال کاٹ دیئے۔

ایبڈریو جانسن نے میچ سے قبل بال ترشوانے پر رضامندی کا اظہار بھی کیا تھا تاہم بال چھوٹے کرانے کے بجائے انہوں نے لمبے بالوں کو سمیٹ کر چھپا دیا تھا لیکن ریفری کے لیے یہ ناقابل قبول تھا۔ سوشل میڈیا پر کھلاڑی کے بال کاٹنے کی وڈیو وائرل ہوگئی۔

سوشل میڈیا پر صارفین اور ماہرین نے سخت ردعمل دیتے ہوئے ریفری مالونی کے فیصلے کو نسل پرستانہ اور نفرت آمیز قرار دیا، قبل ازیں ریفری مالونی کی جانب سے 2016ء میں بھی سیاہ فام ریفری پر جملے کسنے اور دھکے دینے کا معاملہ سامنے آیا تھا۔

یہ سارا معاملہ اپنی جگہ لیکن بال کٹنے پر افسردہ اور غصے کے شکار جانسن نے یہ فائٹ بھی جیت لی جس پر لوگوں نے تالیاں بجا کر ان کے جذبے کو سراہا۔

واضح رہے کہ ریسلر جانسن کا تعلق جمیکا کے مذہب ابراہیم ازم سے ہے اور یہ لوگ مخصوص طریقے سے اپنی زلفوں کو باندھتے ہیں جسے ’رستا فاری ازم‘ کہا جاتے اور یہ کبھی زلفوں کی لٹ کو نہیں کھولتے جس کے باعث بالوں کا وہ حصہ قدرے سخت اور بے جان سا ہوجاتا ہے۔

The post امریکا میں دوران ریسلنگ ریفری نے میچ روک کر ریسلر کے بال کٹوا دیے appeared first on ایکسپریس اردو.





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں